صفحہ اول / لاھور نامہ / مائرہ قتل کیس میں پولیس کارکردگی کا پول کھل گیا

مائرہ قتل کیس میں پولیس کارکردگی کا پول کھل گیا

مائرہ قتل کیس چالان پر 48 عتراضات لگ گئے،پولیس اعتراضات دور نہ کر سکی، پولیس کی ناقص تفتیش سے پراسیکیوشن برانچ پریشان،پولیس کو اعتراضات جلد دور کرنے کا حکم دیدیا۔

تفصیلات کے مطابق مائرہ قتل کیس چالان پر 48 عتراضات لگ گئے،پولیس اعتراضات دور نہ کر سکی، پولیس کی ناقص تفتیش سے پراسیکیوشن برانچ پریشان ہوگئے،پراسیکیوٹرز کا کہنا تھا کہ پولیس کی ناقص تفتیش سے ملزمان رہا ہو جاتے ہیں، پولیس تفتیش کا معیار بہتر نہیں ہو رہا ،پراسیکیوشن کمیٹی نے پولیس کوسختی سے اعتراضات دور کرنے اور اپنی کارکردگی بہتر بنانے کا حکم دیا ہے۔

بڑھتی مہنگائی کےاثرات، کریم بلاک انڈرپاس وفلائی اوور کی لاگت میں 20کروڑ کا ضافہ
پراسیکیوشن سکروٹنی کمیٹی نے مائرہ قتل کیس پر اعتراضات لگاتے ہوئے کہا بتایا جائے کہ اہم کیس کا چالان تاخیر سے کیوں پیش کیا؟جہاں واقعہ ہوا اس جگہ کی سی سی ٹی وی فوٹیج کیوں نہیں لگائی گئی؟ ملزمان کے پولی گرافی ٹیسٹ کیوں نہیں کروائے گئے؟

پراسیکیوشن نے سوال اٹھایا کہ ملزمان کی ڈی این اے رپورٹ کیوں چالان کہ ساتھ نہیں لگائی؟ پراسیکیوشن نے پولیس کو اعتراضات دور کرکے دوبارہ چالان جمع کرانے کا حکم دیا ہے،ملزم ظاہر جدون، اس کے بھائی طاہر جدون اور وسیم جاوید کو چالان میں گناہ گار ملزم نامزد کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ پولیس نے مائر ہ قتل کیس میں ملزم ظاہر جدون کو حراست میں لیاتھا، مائر ہ کو 3مئی کو ڈیفنس لاہور میں قتل کیاگیا،ملزم کے وکیل زرک خا ن کے مطابق ظاہرجدون 27مئی تک ضمانت پر تھا،وہ اپنے بھائی اور کز ن کے ہمراہ شامل تفتیش ہونے تھانے آیا تھا،سٹی نیوز نیٹ سے گفتگوکرتے ہوئے مائرہ کےوالدکا کہناتھا کہ ماہرہ کو اس کے دوست ورغلا کر پاکستان لائے اور پھر قتل کردیا، ماہرہ نے ظاہر جدون کو شادی سے انکار کردیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

شہباز شریف کی بیٹی اور داماد کی جائیدادیں قرق

لاہور(ویب ڈیسک)صاف پانی ریفرنس میں شہباز شریف کی بیٹی اور داماد کی جائیدادیں قرق کرلی …